آئینہ کے رکن بنیں ؞؞؞؞؞؞؞ اپنی تخلیقات ہمیں ارسال کریں ؞؞؞؞؞s؞؞s؞؞ ٓآئینہ میں اشتہارات دینے کے لئے رابطہ کریں ؞؞؞؞؞؞؞؞؞ اس بلاگ میں شامل مشمولات کے حوالہ سے شائع کی جاسکتی ہیں۔

Friday, 5 June 2020

Sir Syed Ka Bachpan By Altaaf Hussain Hali NCERT Class 10 Chapter 4

(اس صفحہ پر ابھی کام جاری ہے)
سرسید کا بچپن
خواجہ الطاف حسین حالی

سوالوں کے جواب لکھیے :
1. سرسید نے اپنا بچپن کیسے گزارا؟
جواب: سرسید نے اپنا بچپن ایک معتدل ماحول میں گزارا۔ نہ تو ان کو اتنی آزادی تھی کہ وہ جہاں چاہیں آزادانہ گھوم پھر سکیں اور نہ ہی اُن پر ایسی پابندی تھی کہ وہ کھیلنے بھی نہ جا سکیں۔انہوں نے اپنے بچپن ہی میں  تیراندازی اور تیراکی کا فن بھی سیکھا۔ بچپن میں سرسید کو تنہا باہر جانے کی اجازت نہیں تھی۔

2. سرسید کے نانا کے یہاں دستر خوان کے آداب کیا تھے؟
جواب: سرسید کے نانا صبح کا کھانا اندر زنانے میں کھاتے تھے ۔ ایک چوڑا چکلا دسترخوان بچھتا تھا۔ بیٹے بیٹیاں ، پوتے پوتیاں ، نواسے نواسیاں اور بیٹوں کی بیویاں سب ان کے ساتھ کھانا کھاتے تھے، بچوں کے آگے خالی رکا بیاں ہوتی تھیں ۔ نانا صاحب ہر ایک سے پوچھتے تھے کہ کون سی چیز کھاؤ گے؟ جو کچھ وہ بتاتا وہی چیز چمچے میں لے کر اپنے ہاتھ سے اس کی رکابی میں ڈال دیتے۔ تمام بچے بہت ادب اور صفائی سے ان کے ساتھ کھانا کھاتے تھے۔ سب کو خیال رہتا تھا کہ کوئی چیز گرنے نہ پائے ، ہاتھ میں کھانا زیادہ نہ بھرے، اور نوالا چبانے کی آواز منہ سے نہ نکلے۔ رات کا کھانا وہ باہر دیوان خانے میں کھاتے تھے۔

3.  سرسید نے بچپن میں کون کون سے کھیل کھیلے؟
جواب: سرسید نے بچپن میں  اکثر گیند ، بلا ، کبڈی ، گیڑیاں، آنکھ مچولی، چیل چِلو وغیرہ کھیلتے تھے۔انہیں تیر اندازی کا فن بھی آتا تھا۔اُن کو ہر طرح کا کھیل کھیلنے کی آزادی تھی۔بس اُن کھیلوں پر پابندی تھی جو چھپا کر کھیلیں جائیں۔

4. سرسید کو گاوں میں جا کر رہنا کیوں پسند تھا؟
جواب: سرسید کو گاؤں میں جا کر رہنااس لیے بہت پسند تھا کہ وہاں انہیں  جنگل میں  آزاد پھرنے کا موقع ملتا ، ساتھ ہی گاؤں میں انہیں عمدہ دودھ اور دہی  اور تازہ تازہ گھی  اور جاٹنیوں کے ہاتھ کی پکی ہوئی باجرے یا مکئی کی روٹیاں کھانا نہایت ہی مزہ دیتا تھا۔

0 comments:

Post a comment

خوش خبری