آئینہ کے رکن بنیں ؞؞؞؞؞؞؞ اپنی تخلیقات ہمیں ارسال کریں ؞؞؞؞؞s؞؞s؞؞ ٓآئینہ میں اشتہارات دینے کے لئے رابطہ کریں ؞؞؞؞؞؞؞؞؞ اس بلاگ میں شامل مشمولات کے حوالہ سے شائع کی جاسکتی ہیں۔

Friday, 14 August 2020

Ghazal - Nooh Narvi

غزل

نوح ناروی

 خدائی میں حاجت روا ایک ہے

قسم ہے خدا کی خدا ایک ہے

جو کوئی گینےتو گنا تا رہوں

مری جان پر کیا جفا ایک ہے

نہیں ہے دوعالم میں اس کا جواب

جو مقبول ہو وہ دعا ایک ہے

پہنچ کر جلا دے جو افلاک کو

وہ لاکھوں میں آ ہ رسا ایک ہے

تمہیں نوح سے کیا نہیں آ گہی

زمانے میں بس ناخدا ایک ہے

0 comments:

Post a comment

خوش خبری