آئینہ کے رکن بنیں ؞؞؞؞؞؞؞ اپنی تخلیقات ہمیں ارسال کریں ؞؞؞؞؞s؞؞s؞؞ ٓآئینہ میں اشتہارات دینے کے لئے رابطہ کریں ؞؞؞؞؞؞؞؞؞ اس بلاگ میں شامل مشمولات کے حوالہ سے شائع کی جاسکتی ہیں۔

Thursday, 2 April 2020

Roshan Jamaal e Yaar Se Hai Anjuman Tamam - Hasrat Mohani - NCERT Solutions Class IX


Roshan Jamal e Yaar Se Hai Anjuman Tamam by Hasrat Mohani  Chapter 13 NCERT Solutions Urdu
(اس صفحہ پر ابھی کام جاری ہے)
غزل
حسرت موہانی

روشن جمال یار سے ہے انجمن تمام
 دہکا ہوا ہے آتش گل سے چمن تمام

 حیرت غرورحسن سے شوخی سے اضطراب
 دل نے بھی تیرے سیکھ لیے ہیں چلن تمام

 دیکھو تو چشم یار کی جادو نگا ہیاں
 بے ہوش اک نظر میں ہوئی انجمن تمام

 نشو و نمائے سبزہ وگل سے بہار میں
 شادابیوں نے گھیر لیا ہے چمن تمام

 اچھا ہے اہل جور کیے جائیں سختیاں
 پھیلے گی یونہی شورش حُبّ وطن تمام

سمجھے ہیں اہل شرق کو شاید قریب مرگ 
مغرب کے کیوں ہیں جمع یہ زاغ وزغن تمام

شیرینی نسیم ہے سوز و گداز میر 
حسرت ترے سخن پہ ہے لطفِ سخن تمام

حسرت موہانی
(1881ء -1951ء)
سید فضل حسن حسرت ،قصبہ موہان ضلع اتاک (یوپی) میں پیدا ہوئے۔ انھوں نے عربی ، فارسی گھر پر پڑھی اور انگریزی تعلیم اسکول میں حاصل کی۔ علی گڑھ سے بی۔ اے کا امتحان پاس کرنے کے بعد انھوں نے ایک ادبی ماہنامہ اردوئے معلی‘ جاری کیا جو عرصہ دراز تک اردو زبان وادب کی خدمت کرتا رہا۔ حسرت مذہبی انسان تھے۔ ان کا ذبان ہم کے تعصبات سے پاک تھا۔ ان میں کمال کی اخلاقی جرات کی۔ جو بات دل میں ہوتی وہی زبان پر لاتے ۔ منافقت او تصنع سے انھیں دور کا واسطہ نہ تھا۔ خودداری، بے باکی ، اصول پسندی سادگی اور خلوس ان کے نمایاں اوصاف تھے۔

حسرت کو طالب علمی کے زمانے سے شعروشاعری کا شوق تھا لیکن وہ تحریک آزادی میں بھی عملی طور پر شریک رہے ۔ قوم کے بڑے رہنماؤں میں ان کا شمار ہوتا ہے۔ ان کے رسالے اردوئے معلی کی ضمانت ضبط کر لی گئی۔ انھوں نے کئی بار قیدو بند کی صعوبتیں برداشت کیں لیکن آزادی کامل کے سلسلے میں کسی سمجھوتے کے قائل نہ تھے۔ عمل آزادی کا نعرہ سب سے پہلے انھوں نے ہی بلند کیا تھا۔

اردو غزل کو از سر نو مقبول بنانے میں حسرت موہانی کا بڑا ہاتھ ہے۔ انھوں نے غزل کو تہذیب عاشقی کی شائستہ زبان سے آشنا کیا اور در دو اثر کے ساتھ شیر ینی ، دل کشی اور طرز ادا میں شانتی و لطافت پیدا کیا ۔ حسرت موہانی نے اپنی غزل میں عشقیہ مضامین کے علاوہ قومی سیاست اور قومی یک جہتی پر مبنی مضامین بھی داخل کیے۔ انھوں نے پرانے شعرا کا ایک بہت عمدہحسرت موہانی روشن جمال یار سے ہے انجمن تمام . انتخاب انتخاب جن کے نام سے چودہ جلدوں میں شائع کیا اور اس انتخاب کے ذریعے کئی ایسے شعرا کا کلام محفوظ ہو گیا اور دور دور تک پہنچا جو پردہ گم نامی میں تھے۔
حسرت موہانی نے نواب اصغرعلی خان تھیم کے شاگردنشی امیر الله تایم کی شاگردی اختیار کی۔
Roshan Jamal e Yaar Se Hai Anjuman Tamam by Hasrat Mohani  Chapter 13 NCERT Solutions Urdu
لفظ و معنی
انجمن  : محفل
چلن : طریقه، ڈھنگ
اضطراب : بے چینی
 نشوونما : پھلنا پھولنا، فروغ پانا
ابل جور : ظلم کرنے والے
شورش : ہنگامہ، شور
زاغ : کوا
زغن  : چیل

غور کرنے کی بات
* حسرت کے کلام کی سب سے بڑی خصوصیت سادگی ہے۔ ان کی زندگی جتنی سخت کوشی میں گزری ان کی شاعری اس قدر نشاط انگیز ہے۔
* مقطعے میں تم سے مراد نواب اصغر علی خاں نسیم دہلوی ہیں جوکہ حسرت موہانی کے استادمنشی امیر اللہ تسلیم کے استاد تھے۔ وہ جس طرح نسیم کی شیرینی  کے قائل تھے اسی طرح میر کے سوز وگداز کے بھی معترف تھے۔ شیرینی سے مراد زبان کی صفائی اور اس کا بامحاورہ اور سلیسہونا ہے۔

 سوالوں کے جواب لکھیے:
 1. دہکا ہوا ہے آتش گل سے چمن تمام اس مصرعے میں آتش گل سے کیا مراد ہے؟
جواب:

2. اہل جور سے شاعر کا کیا مطلب ہے؟
جواب:

 3. غزل کے کس شعر میں تعلقی کا اظہار کیا گیا ہے؟
جواب:

4. شاعر کے خیال میں وطن سے محبت کا شورکن وجوہ سے پھیل رہا ہے؟
جواب:

عملی کام
* غزل کی بلندخوانی کیجیے۔
* پسندیدہ اشعار یاد کیجیے۔
* غزل کے اشعار کوخوش خط تھے۔
* اس غزل کے قافیوں کی نشاندہی کیجیے اور ان سے ملتے جلتے تین اور قافیے لکھیے ۔
* اشعار میں مختلف جگہوں پراضافت کا استعمال ہوا ہے، ایسے الفاظ تلاش کر کے لکھے ۔
* جن اشعار میں حرف عطف کا استعمال ہوا ہے ان شعروں کی نشاندہی کیجیے۔
* مقطع میں جن تین شعراس لص آئے ہیں ان کے پورے نام لکھیے۔


کلک برائے دیگر اسباق

0 comments:

Post a comment

خوش خبری