آئینہ کے رکن بنیں ؞؞؞؞؞؞؞ اپنی تخلیقات ہمیں ارسال کریں ؞؞؞؞؞s؞؞s؞؞ ٓآئینہ میں اشتہارات دینے کے لئے رابطہ کریں ؞؞؞؞؞؞؞؞؞ اس بلاگ میں شامل مشمولات کے حوالہ سے شائع کی جاسکتی ہیں۔

Friday, 18 September 2020

Mir Taqi Mir

 میرتقی میر

(1722 - 1810)

میر تقی میر آگرہ میں پیدا ہوئے ۔ ابھی  بچّے ہی تھے کہ والد کا انتقال ہوگیا۔ کچھ دن بعد وہ دلی میں آ بسے۔ دلی کی زندگی میں جب انتشار پیدا ہونے لگا تو میر تلاش معاش میں لکھنؤ چلے گئے۔ باقی زندگی لکھنؤ ہی میں گزاری اور وہیں ان کا انتقال ہوا۔ میر کلاسیکی اردو غزل کے ایک بڑے شاعر ہیں ۔ وہ اردو غزل کے امام سمجھے جاتے ہیں ۔ سادہ اور عام فہم الفاظ میں سوز و گداز کی کیفیات پیدا کرنے میں میر کا کوئی ثانی نہیں ۔ غزلوں کے علاوہ شاعری کی دوسری اصناف میں بھی انھوں نے خوب جوہر دکھائے ہیں ۔ ان کی مثنویوں ’بہارِعشق‘،’ شعلۂ عشق‘ اور ‘دریائےعشق‘ کو بھی بہت شہرت ملی۔ فارسی میں اردو شعرا کا ایک تذکره، ” نکات الّشعرا“ اور ”ذکرِ میر“ کے عنوان سے اپنی سوانح حیات بھی لکھی ہے۔ انھیں خدائے سخن کے لقب سے یاد کیا جاتا ہے۔

0 comments:

Post a comment

خوش خبری