آئینہ کے رکن بنیں ؞؞؞؞؞؞؞ اپنی تخلیقات ہمیں ارسال کریں ؞؞؞؞؞s؞؞s؞؞ ٓآئینہ میں اشتہارات دینے کے لئے رابطہ کریں ؞؞؞؞؞؞؞؞؞ اس بلاگ میں شامل مشمولات کے حوالہ سے شائع کی جاسکتی ہیں۔

Wednesday, February 13, 2019

Ghode Aur Hiran Ki Kahani - NCERT Solutions Class VI Urdu

گھوڑے اور ہرن کی کہانی
سوچیے اور بتائیے

1. ہرن نے گھوڑے کو کیوں مارا؟
جواب: ایک بار کسی بات پر دونوں میں جھگڑا ہو گیا اور ہرن نے گھوڑے کو خوب مارا۔

2. گھوڑا ہرن سے کیوں بدلا لینا چاہتا تھا؟
ایک بار جھگڑے میں ہرن نے گھوڑے کو پیٹ پیٹ کر زخمی کردیا تھا اس لیے گھوڑا ہرن سے بدلہ لینا چاہتا تھا۔

3. شکاری سے مل کر گھوڑا کیوں خوش ہوا؟
جواب: شکاری سے مل کر گھوڑا اس لیے خوش ہوا کہ اسے لگا کہ اب وہ شکاری کی مدد سے ہرن سے بدلہ لے سکے گا۔
4. گھوڑے نے ہرن سے کس طرح بدلا لیا؟
جواب: گھوڑے نے ایک شکاری کو ہرن کا نہ صرف پتہ بتایا بلکہ اپنی ۔پیٹھ پر شکاری کو بٹھاکر اسے ہرن‌کے پاس لے گیا۔اور شکاری نے ہرن کو مار دیا۔

5. ہرن کے مارے جانے کے بعد گھوڑے نے شکاری سے کیا کہا؟
جواب: گھوڑے نے شکاری سے کہا'' بھائی شکاری! میں تمہارا احسان مند ہوں کہ تم نے میرے دشمن کا کام تمام کردیا۔ اب تم اپنا شکار لے جا سکتے ہو۔''

6. شکاری نے گھوڑے کو کیا جواب دیا؟
جواب: شکاری نے گھوڑے سے کہا کہ اس میں احسان کی کیا بات ہے۔ مجھے تو ایک فایدہ اور ہوا کہ مجھے ایک کام کا جانور مل گیا۔

7. شکاری نے گھوڑے کو کام کا جانور کیوں سمجھا؟
جواب: شکاری نے گھوڑے کو کام جانور اس لیے کہا کا وہ آرام سے اس کی سواری کر سکتا تھا۔

8. آپس میں لڑنا جھگڑنا کیوں ٹھیک نہیں؟
لگام کس سجانے کے بعد گھوڑے کو اپنی بے بسی سے سمجھ آیا کہ لڑنا جھگڑنا اچھی بات نہیں۔

صحیح جملوں پر صحیح اور غلط پر غلط کا نشان لگائیے

1. ہرن اور گھوڑے میں بہت دوستی تھی۔(صحیح)

2. گھوڑا ہلکا پھلکا اور پھرتیلا تھا۔(غلط)

3. شکاری نے گھوڑے کو اپنی پیٹھ پر بٹھا لیا۔(غلط)

4. گھوڑا ہر قیمت پر ہرن سے انتقام لینا چاہتا تھا۔(صحیح)

5. آپس میں لڑنا جھگڑنا ٹھیک بات ہے۔(غلط)

نیچے لکھی ہوئی باتوں کی وجہ لکھیے۔

ہرن نے گھوڑے کو بہت پیٹا کیونکہ

گھوڑے کو غصّہ اس لیے آیا کہ

3. ہرن کے مرنے کے بعد گھوڑے نے اطمنان کا سانس لیا کیونکہ

4. شکاری کے سامنے گھوڑا بے بس تھا کیونکہ

5. آپس میں لڑنا جھگڑنا ٹھیک نہیں کیونکہ

نیچے دیے ہوئے جمع الفاظ کی واحد لکھیے





ترتیب

0 comments:

Post a Comment

خوش خبری